جب عید کا چاند نکلتا ہے۔۔۔۔۔شاعر۔۔۔۔مبشراحمد

Spread the love

ؒغزل

جب عید کا چاند نکلتا ہے
کہاں غم کا سورج ڈھلتا ہے
سکوں جیسے مفلس کا قرض
پھر بھیتر بھیتر جلتا ہے
سینہ کوبی سے رک جاؤں
تراہی کا دہر دہلتا ہے
شق ہو جاۓ جب دل و جگر
مرھم سے کون بہلتا ہے
تو بنا بحر کےغزل نا لکھ
یہاں لفظ لفظ سے جلتا ہے
پی لیتے ہیں ہم جام نظر
جزبوں کا زہر اگلتا ہے
جب ناز سے نکلے وہ نیم جاں
مہ خم چم کیوں بدلتا ہے
نارسائی سے مبشر ہے ڈرے
وہ پاس ہو تو سب چلتا ہے
16/6/2018

Facebook Comments

2 thoughts on “جب عید کا چاند نکلتا ہے۔۔۔۔۔شاعر۔۔۔۔مبشراحمد

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *